January, 2016

اپنے شانے سے لگا لے کوئی

اپنے شانے سے لگا لے کوئی گر رہا ہوں میں، سنبھالے کوئی کیسی ویرانی ہے، حیرانی ہے گرد جمتی ہے، نہ جالے کوئی اک بھنور اور بھی سر کر نا ہے اس بھنور سے تو نکالے کوئی حسن اک شعلئہ جوالہ ہے آگ میں ہاتھ نہ ڈالے کوئی

مکمل تحریر پڑھنے کے لیئے کلک کریں

Next posts